خواتین

کون کون ہوئی جنسی حراسانی کا شکار خواتین میں سے ؟

جنسی ہراسانی کے خلاف ترقی یا فتہ ممالک سے شروع ہو نے والی مہم می ٹو کے حق میں دنیا بھر میں آواز اٹھائی گئی ، پاکستان میں بھی اس مہم کے حق میں آوازیں اٹھیں ۔

تفصیلات کے مطابق بین الاقوامی مہم می ٹو کی حمایت میں بہت ساری خواتین سامنے آئیں اور اپنے ساتھ ہونے والی جنسی ہراسانی کے واقعات سے پردہ اٹھا یا ،ان میں شو بز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی خواتین قابل ذکر ہیں۔

می ٹوتحریک کابڑھتاہواغلط استعمال،علی ظفراورما ہرہ خان بھی بو ل پڑے

ذرائع کے مطابق می ٹو مہم سے قبل شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی خواتین نے کبھی کھل کر اپنے ساتھ ہوئے جنسی ہراسانی کے واقعات پر بات نہیں کی تھی تاہم پاکستان میں سب سے پہلے گلوکارہ و اداکارہ میشا شفیع نے می ٹو کا حصہ بنتے ہوئے جنسی ہراسانی کے واقعے کے بارے میں سوشل میڈیا پر اظہار رائے کیا ۔

میشا شفیع کے بعد ان کی ساتھی فنکاراؤں کو بھی ہمت ملی اور انہوں نے بھی اپنے ساتھ ہوئے واقعات نہ صرف لوگوں کے ساتھ شیئر کیے بلکہ جنسی ہراسانی کے خلاف با ت کرتے ہوئے کڑی الفاظ میں مذمت کی۔

میشا شفیع

اپریل 2018 میں اداکارو گلو کارہ میشا شفیع نے سماجی تعلقات کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر انکشاف کیا کہ انہی نا مور گلوکار واداکار علی ظفر نے کئی بار مختلف مواقعوں پر جنسی ہراسانی کا نشانہ بنایا۔

یہ جنسی ہراسانی کاکیس پاکستان میں اتنا مقبول ہوا کہ تقریباً دو سال گزرنے کے باوجود آج بھی میڈیا اس کیس کو ترجیحی بنیادوں پر کوریج دیتا ہے اور ان کا یہ کیس اب عدالت میں بھی زیر سما عت ہے۔

فریحہ الطاف

پا کستان شو بز انڈسٹری کی شہرت یا فتہ کوریوگرافر، اداکارہ ، ماڈل، سماجی کارکن اور ایونٹ مینجمنٹ کی سی ای او فریحہ الطاف بھی بچپن میں جنسی ہراسانی کا شکار رہ چکی ہیں۔

فریحہ الطاف نے سوشل میڈیا پر اپنے ساتھ ہوئے واقعے کا ذکر کرتے ہوئے کہاتھا کہ انہیں سب سے پہلے ان کے گھر میں کام کرنے والے باورچی نے ہراسانی کا نشانہ بنایا تھا۔

فریحہ الطاف نے جنسی ہرا سانی کے خلا ف با ت کر تے ہوئے اس واقعے کے بارے میں اپنے والدین کو بتایا تو انہوں نے باورچی کو سزا تو دی لیکن انہیں اس معاملے پر اپنا منہ بند رکھنے کے لیے کہا گیا۔

فریحہ الطاف نے مزید کہا کہ یہ معاملہ ایسا نہیں تھا کہ اس پر خاموشی اختیار کی جاتی۔

نا دیہ جمیل

پاکستان کی ایک اورمشہور اداکار ہ نا دیہ جمیل نے بھی می ٹو کو سپورٹ کرتے ہوئے اپنا ذاتی کڑوا تجربہ شئیر کیا ۔

نا دیہ جمیل نےسوشل میڈیا پر بتاتے ہوئے کہا کہ وہ بچپن میں ایک بار نہیں بلکہ کئی بار ہراسانی کا شکار ہوئی ہیں،سب سے پہلے انہیں قرآن کی تعلیم دینے والے قاری صاحب نے ہراسانی کا نشانہ بنایا، پھر ان کے گھر کے ڈرائیور نے ان کے ساتھ نازیبا حرکات کیں،اس کے علاوہ بھی کئی مواقعوں پر انہیں جنسی ہراسانی کا نشانہ بنایا گیا۔

عا ئشہ عمر

اداکارہ، گلوکارہ و ماڈل عائشہ عمر نے ایک انٹرویو کے دوران اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے کے بارے میں بتایا کہ انہیں بھی کام کے دوران ہراسانی کا نشانہ بنایا گیا تھا لیکن وہ اتنی بہادر نہیں ہیں کہ اپنے ساتھ ہوئے واقعے کے بارے میں سب کے سامنے بات کرسکیں لیکن وہ جنسی ہرا سانی کے خلاف ہیں ۔

حریم شاہ

ٹک ٹاک سو شل میڈیا اسٹار حریم شاہ نے بھی جنسی ہراسانی کے خلاف با ت کر تے ہوئے حال ہی میں اپنی ایک ویڈیو شئیر کی، جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک تقریب کے دوران انہیں مقامی افراد کی جانب سے ہراسانی کا نشانہ بنایاگیا۔،حریم شاہ نے می ٹو کا ہیش ٹیگ استعمال کرتے ہوئے کہا کہ اس دنیا میں کیسے کیسے بے شرم لوگ ہوتے ہیں۔

Show More

Related Articles

26 Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close