پاکستان

ہو جائیں گے سبکدوش،چیف جسٹس پاکستان

چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ آج اپنے عہدے سے سبکدوش ہو جائیں گےچیف جسٹس کے اعزاز میں فل کورٹ ریفرنس ہوگا جس میں آصف سعید کھوسہ اپنا الوداعی خطاب کریں گے۔تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس کی ریٹائرمنٹ کے بعد کل 21 دسمبر کو جسٹس گلزار نئے چیف جسٹس پاکستان کے عہدے کا حلف لیں گے۔ذرائع کے مطابق جسٹس آصف سعید کھوسہ نے رواں سال 18 جنوری کو چیف جسٹس پاکستان کا عہدہ سنبھالا تھا۔دہشت گردی صرف پاکستان کا نہیں پوری دنیا کا مسئلہ ہے، آصف سعید کھوسہ
قابل ذکر با ت یہ ہے کہ انہوں نے چیف جسٹس بننے کے بعد کوئی ازخود نوٹس نہیں لیا۔آصف سعید کھوسہ نے بطور چیف جسٹس آرمی چیف مدت تعیناتی کیس سمیت نواز شریف کی مشروط ضمانت سے متعلق بھی فیصلہ دیا۔اس کے ساتھ ساتھ انھوں نے پاناما اسکینڈل سمیت اہم مقدمات کی بھی سماعت کی۔آصف سعید کھوسہ نے 2007 کی ایمرجنسی کے دوران پرویز مشرف کے خلاف اس وقت کے چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کا ساتھ دیا تھا اور فروری 2010 میں سپریم کورٹ کے جج تعینات ہوئے۔پاکستان کے 26ویں چیف جسٹس سپریم کورٹ کے اس سات رکنی بنچ کا بھی حصہ تھے جس نے ملکی تاریخ میں پہلی بار منتخب وزیراعظم کو عدالتی حکم عدولی پر توہین عدالت کا مجرم قرار دیا تھا۔گزشتہ 19 سال کے عدالتی کیریئر میں آصف سعید کھوسہ نے 55 ہزار مقدمات کے فیصلے کر کے ایک منفرد ریکارڈ بھی اپنے نام کیا ہے۔یاد رہےکہ آصف سعید کھوسہ نے ممتاز قادری کی سزائے موت کو برقرار رکھا اور آسیہ بی بی کی اپیل سننے والے بینچ میں بھی شامل رہے۔اس کے علا وہ پاناما کیس سننے والے پانچ رکنی بینچ کا بھی آصف سعید کھوسہ حصہ رہے اور انہوں نے اپنے اختلافی نوٹ میں مشہور اطالوی ناول گاڈفادر کا ڈائیلاگ لکھا ہر بڑی دولت کے پیچھے جرم کی ایک داستان چھپی ہوتی ہے۔

Show More

Related Articles

32 Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close