کھیل

فخرزمان نے ’’گمشدہ فارم‘‘ کی واپسی کی اہمیت کو تسلیم کرلیا

کراچی(اسپورٹس ڈیسک)قومی کرکٹ ٹیم کے اوپننگ بیٹسمین فخر زمان نے اپنی ’’گمشدہ فارم‘‘کی واپسی کی اہمیت کو تسلیم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر انہوں نے بہتر کرکٹ نہیں کھیلی تو پھر ٹیم میں جگہ برقرار رکھنا مشکل ہو جائے گا۔فخر زمان پرامید ہیں کہ وہ ڈومیسٹک کرکٹ میں محنت کے بعد آئندہ برس ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ تک اپنی تیکنیک میں موجود خامیاں دور کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے ۔آخری دس ٹی ٹوئنٹی میچوں میں محض 85 رنز بنانے والے فخر زمان دس ماہ سے ٹیسٹ ٹیم میں بھی جگہ نہیں بنا سکے اور ناقص فارم کے سبب کڑی تنقید کی زد میں ہیں۔ کراچی کے یو بی ایل اسپورٹس کمپلیکس پر میڈیا سے گفتگو میں فخر زمان نے اعتراف کیا کہ وہ اپنی ذاتی کارکردگی سے مطمئن نہیں اور انہیں سامنے آنے والی خامیاں دور کرنے کی اشد ضرورت ہے جس کیلئے وہ قائد اعظم ٹرافی میں کھیل رہے ہیں تاکہ اعتماد کے ساتھ کارکردگی بھی بحال ہو سکے ۔انہوں نے تسلیم کیا کہ بطور اوپنر انہیں وکٹ پر دیر تک قیام کی ضرورت ہے جس کیلئے وہ ڈومیسٹک کرکٹ کھیل رہے ہیں تاکہ نہ وہ صرف ٹیسٹ ٹیم میں واپس آ سکیں بلکہ ٹی ٹوئنٹی میچوں کیلئے بھی کارکردگی کو بہتر بنائیں کیونکہ اگر انہوں نے بہتر کرکٹ نہیں کھیلی تو قومی ٹیم میں واپسی مشکل ہو جائے گی۔بائیں ہاتھ کے بیٹسمین کا کہنا تھا کہ وہ کوئی جواز فراہم کئے بغیر تسلیم کرتے ہیں کہ وہ برا کھیل رہے ہیں اور وقت آگیا ہے کہ اپنی خامیوں کو دور کریں اور آسٹریلیا میں جو تجربہ حاصل ہوا اس سے آئندہ برس ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں فائدہ اٹھائیں۔

Show More

Related Articles

Back to top button
Close
Close