دلچسپ

نیند کی کمی سے خواتین کی ہڈیاں بھی کمزور ہوسکتی ہیں:تحقیق

نیویارک(نمائندہ کماس ) اور یہ روش کئی سال تک برقرار رکھتی ہیں تو اس سے دھیرے دھیرے ان کی ہڈیوں کی کثافت کم ہوتی چلی جاتی ہے اور یہ کیفیت آگے چل کر ہڈیوں کے بھربھرے پن کی وجہ بن سکتی ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق پروفیسر ہیدر بالکم نے کہا کہ خصوصاً خواتین سات گھنٹے تک معمول کی نیند ضرور لیں ورنہ ان کی نفسیاتی صحت کیساتھ ساتھ ہڈیاں بھی متاثر ہوسکتی ہیں۔یہ تحقیق جرنل آف بون اینڈ منرل ریسرچ میں شائع ہوئی جس میں 11 ہزار سے زائد ایسی خواتین کو شامل کیا گیا جو عمر کے اس حصے میں پہنچ چکی تھیں جب خواتین کو ماہواری آنا بند ہوجاتی ہے ۔ ان میں سے جو خواتین پانچ گھنٹے یا اس سے کم کی نیند لیتی ہیں، ان کے جسم میں چار مقامات پر ہڈیاں کمزور ہوجاتی ہیں یعنی ہڈیاں کثافت کھو کر نرم پڑسکتی ہیں۔ ان میں پورے جسم، کولہے ، گردن اور ریڑھ کی ہڈیاں کمزور ہوسکتی ہیں۔ اس کے برعکس کم سے کم سات گھنٹے سونے والی خواتین میں یہ رجحان نہیں دیکھا گیا۔

Show More

Related Articles

14 Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close