صحت

ملک بھر کے تعلیمی اداروں کو30 مئی تک بند رکھنے کاامکان

کراچی (نیوز ڈیسک) ملک بھر کے تعلیمی اداروں کو30 مئی تک بند کئے جانے کا امکان ، وزیرتعلیم سندھ وفاق سے مشاورت کریں گے۔ تفصیلات کے مطابق وزیر تعلیم سعید غنی نے کہا ہے کہ 5 اپریل کو سکول کھولنا بہت مشکل ہو چکا ہے۔ سندھ میں تعلیمی اداروں کو 30 مئی تک بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اسی حوالے سے وفاق و دیگر صوبوں سے بھی بات کریں گے کہ ملک بھر میں تعلیمی اداروں کو 30 مئی تک بند کر دیا جائے۔سعید غنی کا کہنا تھا کہ غیر معمولی حالات ہیں، مشکلات آئیں گی۔ سندھ حکومت نے وفاق سے مطالبہ کیا کہ ایران میں موجود پاکستانیوں کو واپس لانے کیلئے چارٹرڈ طیارہ بھیجا جائے۔

وزیرتعلیم سندھ سعید غنی نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ یکم جون سے ہمارا تعلیمی سال شروع ہوگا، یکم سے پندرہ جون تک پہلی سے آٹھویں جماعت کے امتحانات ہوں گے، پندرہ جون کے بعد نئی کلاسزشروع ہوں گی، 15 جون سے نویں اور دسویں جماعت کے امتحانات ہوں گے جس کے نتائج کا اعلان اگست 2020 کوہوگا، 6 جولائی 2020 سے گیارہویں اور بارہویں جماعت کے امتحانات ہوں گے جب کہ یکم اگست سے گیارہویں اوربارہویں کی کلاسزشروع ہوں گی، بارہویں جماعت کے نتائج 15 ستمبرکو جاری کردیے جائیں گے۔سعیدغنی نے کہا کہ آج کھلنے والے اسکول سیل کیے گئے ہیں، آئندہ بھی اسکول بغیراجازت کھلے تو انہیں بند کرائیں گے، حالات تقاضا کرتے ہیں لوگ ہم سے تعاون کریں، حالات کی سنگینی کو سمجھنے کی ضرورت ہے، ہم بڑی تن دہی سے لوگوں کی اسکریننگ کررہے ہیں، اس وقت ہمیں غیرمعمولی حالات کا سامنا ہے۔ والدین سے گزارش ہے بچوں کو گھروں میں رکھیں، چھٹیوں کا مقصد ان کی صحت کا تحفظ یقینی بنانا ہے، امید ہے حالات بہترہوجائیں گے۔سعید غنی نے کہا کہ کوئی بھی اسکول ایڈوانس فیس مانگے گا اس کے خلاف کارروائی کریں گے، اکثروالدین کہہ رہے ہیں اسکول بند ہیں توہم فیسیں کیوں دیں، چھٹیوں میں بھی اسکولوں میں فیس ادا کی جاتی ہے کیونکہ اساتذہ اورملازمین کو تنخواہیں ادا کرنا ہوتی ہیں، عدالت نے فیصلہ کیا ہے کہ کوئی بھی اسکول بچوں سے ایڈوانس فیس نہیں لے۔ وفاقی وزیرتعلیم شفقت محمود سے بات کی ہے، کوشش کر رہے ہیں پورے پاکستان مین چھٹیوں کے حوالے سے ایک فیصلہ ہوجائے۔وزیرتعلیم سندھ سعید غنی نے کہا کہ تفتان سے آنے والے ایک سو دس افراد کا ٹیسٹ کیا تو50 مثبت آئے، تفتان میں کورنٹائن میں جس طرح لوگوں کورکھا گیا اس میں بنیادی تقاضوں کو پورا نہیں کیا گیا، ہماری معلومات کے مطابق ایران میں 900 پاکستانی موجود ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close