پاکستان

بڑا جلسہ تیاریاں مکمل ۔۔۔ پنجاب سے ہزاروں جیالے پنڈال پہنچ گئے

راولپنڈی(آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی راولپنڈی کی مقامی قیادت نے 12سال بعد27دسمبرکو راولپنڈی لیاقت باغ میں بے نظیر بھٹو کی جائے شہادت پر جلسے کی تما م تیاریاں مکمل کر لیں بلاول بھٹو زرداری اپنی والدہ کی جائے شہادت پر پہلی بار خطاب کریں گے جس میں اہم اعلان کریں گے جلسے کو بھرپور بنانے کے لئے پنجاب سے سنئیر رہنما پی پی پی رانا جمیل احمد منج ہزاروں جیالوں کے قافلے کی قیادت کرتےہوئے جلسے سے ایک روز قبل ہی پنڈال میں پہنچ گئے جبکہ جیالوں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے نفیسہ شاہ،سید نیئر حسین بخاری، مصطفی نواز کھوکھر، قمر زمان کائرہ اور پرویز اشرف،شیری رحمان سمیت مرکزی قائدین

نے بھی جلسے کی تیاریوں اور سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا جلسے کے لئے 100فٹ لمبا اور60فٹ چوڑا اسٹیج تیار کیا گیا ہے جبکہ لیاقت باغ کے اندر اور باہر 4بڑی سکرینیں بھی نصب کی گئی ہیں جلسہ گاہ میں مصنوعی روشنیوں اور بھاری ساؤنڈ سسٹم لگایا گیا ہے بلاول بھٹو کی آمد پر رانا جمیل منج کی جانب سے شہر بھر میں خوش آمدید کے ہزاروں بینرز آویزاں کئے گئے ہیں اس موقع پر جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کی مرکزی قیات نے حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے حکومت نالائق،نااہل اور سلیکٹڈ ہے جسے اب جان ہی ہو گا اور پاکستان کی ترقی اور بہتری کے لئے بلاول بھٹو زرداری ہی وہ واحد لیڈر ہے جو عوام کے زخموں پر مرحم رکھنے کی صلاحیت رکھتا ہے راولپنڈی میں جیالے بلاول بھٹو زرداری کے شاندار استقبال اور بی بی کی 12ویں برسی کویادگاربنانے کاعزم لئے ہوئے لیاقت باغ آئے ہیں آنے والے کارکنوں نے 2روز قبل ہی لیاقت باغ میں دیرے ڈال لئے ہیں جبکہ دن بھر پارٹی ترانوں پر بھنگڑے ڈالے جاتے رہے ”زندہ ہے بھٹو زندہ ہے“،”زندہ ہے بی بی زندہ ہے“ اور ”جئے بھٹو“ کے نعرے لگاتے رہے پیپلز پارٹی راولپنڈی کی مقامی قیادت کی جانب سے شہر بھر کی طرح راولپنڈی ریلوے اسٹیشن پربھی استقبالیہ کیمپ لگائے گئے ہیں جوراولپنڈی کینٹ کے جنرل سیکرٹری عاصم ادریس،سینئر رہنما ملک ریاست،راجہ بشیر ودیگر کے زیر نگرانی جیالوں کے استقبال کے لئے دن رات فرائض سرانجام دیں گے کراچی سے آنے والے قافلوں میں 20سے زائد بسیں،کاریں شامل جبکہ ٹرین کی8 بوگیاں شامل ہیں جبکہ پاکستان بھر سے آنے والے جیالوں کی وجہ سے لیاقت باغ اور گردو نواح میں واقع ہوٹلوں میں جگہ کم پڑ گئی کئی لوگ گاڑیوں میں رات گزارنے پر مجبور ہو گئے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close