شہر شہر

مسلح ڈاکوؤں کی دیدہ دلیری سے لوٹ مار جاری ،پولیس خاموش تماشائی

قلعہ کالروالا( نمائندہ کماس )ضلع نارووال کے معروف قصبہ تلونڈی بھنڈراں ، سراج اڈاتھانہ ندوکے علاقہ میں مسلح ڈاکوؤں کی دیدہ دلیری سے لوٹ مار، لاکھوں روپے نقد ی اور طلائی زیورات چھین لیے گئے ۔ ایک ہی رات میں کئی وارداتیں تلونڈی بھنڈراں رحیم گارڈن ٹاوَن میں محمد شہباز بٹ کونسلر کے گھر میں مسلح ڈاکووَں نے داخل ہو کرشہباز بٹ اور اس کی فیملی کوتشدد کا نشانہ بناکر موبائل فون، نقدی25000ہزار روپے سے محروم کردیا ، کوٹ لکھا سنگھ سے میاں محمد ذیشان نے بتایا ہے 12مسلح ڈاکووَں نے یرغمال بنا کر میر ے بھائی میاں محمدسرفرازآڑھتی کے گھر سے3 لاکھ پچاس ہزارروپے نقدی طلائی زیورات19تولے طلائی زیورات ،2عددقیمتی موبائل فون اور ایک عدد پسٹل دیگر کاغذات اور اس کے بھتیجے میاں شہروز کے گھر سے 1لاکھ دس ہزار روپے نقدی موبائل فون اور7 تولے طلائی زیورات لوٹ لیے گئے ۔ نارووال مین مریدکے روڈ اڈا سراج پرعمر کریانہ سٹور سے نقدی 65ہزار روپے، احسن کریانہ سٹور کے مالک محمد احسن ساکن کوٹلی وریام سنگھ سے 70ہزار نقدی چھن کر فرار ہوگئے، سراج اڈا کے رہائشی محمد آصف جٹ نے بتایا کہ میں میرا بھائی محمد راشد سیالکوٹ جارہا تھا کہ پسرور روڈ پر نامعلوم مسلح افراد نے گن پوائنٹ پر 19000ہزار نقدی چھن کر فرار ہوگئے ، اسی اثنا میں گزشتہ رات لاہور سے آنے والا کنگرہ ٹائم ایم این بی 4846 جب 9 بجے کے قریب تلونڈی بھنڈراں ڈھوڈا روڑ پر تلونڈی بھنڈراں کے بنیادی مرکز صحت کے قریب پہنچا تو پہلے سے گھات لگائے نا معلوم مسلح ڈاکووں نے اسلحہ کے زور پر روک کر لوٹ مار شروع کر دی 12 سے 14 رکنی ڈکیٹ گینگ نے بس کے اندر داخل ہو کر فائرنگ شروع کردی جس سے مسافروں میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا اور علاقہ ڈکیٹ گینگ کی گولیوں کی تڑتڑاہت سے گونج اٹھا مسلح ڈکیٹ گینگ نے خواتین مسافروں کو تشدد کا نشانہ بنایا اور ان کو لاکھوں کے طلائی زیورات کے ساتھ لاکھوں کی نقدی سے بھی محروم کر دیا اس کے بعد تلونڈی بھنڈراں کی طرف سے آنے والے موٹر سائیکل سواروں محمداکرم;46;پولا درزی وغیرہ کو روک ان کو تشدد کا نشانہ بنایا اور اکرم کو اسلحے کا بٹ مار کر اس کا سر پھاڑ دیا اور تمام نقدی جو مبلغ 8 سے دس ہزار تھی اس سے محروم کر دیا ۔ تھانہ ندوکے کی موبائل جس کی سرچ لاءٹس تک بند تھی وہ بھی موقع پر پہنچ گئی مگر بجائے ڈاکووں کا تعاقب کرنے کے پولیس وہاں کھڑی تماشہ دیکھتی رہی ڈاکوؤں کی فائرنگ کے جواب میں ایک گولی بھی چلانے کی زحمت نہ کی اور ڈاکوؤں کو فرار ہونے کا پورا موقع فراہم کیا گیا جس سے لٹنے والے مسافر اور مقامی لوگ مشتعل ہو گئے اور پولیس کے خلاف نعرے بازی شروع کر دی تاہم ڈی ایس پی صدر اور ایس ایچ او ندوکے ثروت حکیم کے موقع پر پہنچنے اور لوگوں سے مذاکرات اور ڈکیٹ گینگ کی جلد گرفتاری کی یقین دہانی پر مسافر اور مقامی لوگ منتشر ہو گئے لوگوں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے پولیس کی کاکردگی پر مایوسی کا اظہار کیا اگر شہریوں نے اسی طرح لٹنا ہے تو پھر حکمرانوں اور پولیس کے کردار پر سوالیہ نشان ہے ۔ اس سے پیشتر کہ صورت حال مزید خراب ہونے سے قبل وزیراعلیٰ پنجاب اور آئی جی پنجاب نوٹس لیں ۔ اور اس ڈکیٹ گینگ کو فوری گرفتار کیا جائے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close